آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک سمیت عالمی اداروں سے لین دین سود سے پاک بنایا جائے وفاقی شرعی عدالت کی حکومت کو ہدایت

Must read


آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک سمیت عالمی اداروں سے لین دین سود سے پاک بنایا جائے ، …

اسلام آباد ( ڈیلی پاکستان آن لائن )  وفاقی شرعی عدالت نے سود کے خلاف کیس کا فیصلہ 19 سال بعد سنا دیا ، عدالت نےا پنے فیصلے میں   حکومت کو اندرون وبیرونی قرض سودسےپاک نظام کےتحت لینےکی ہدایت کی  اور کہا کہ آئی ایم ایف ، ورلڈ بینک سمیت عالمی اداروں سے لین دین سود سے پاک بنایا جائے ۔

وفاقی شرعی عدالت نے  فیصلے میں قرار دیا کہ  تمام بینکوں کی جانب سےاصل رقم سے زائد رقم لینا سود کے زمرےمیں آتاہے، حکومت کوہدایت دی جاتی ہےکہ انٹرسٹ کالفظ ختم کرے، ربامکمل طورپرہرصورت میں غلط ہے،  ربا سے پاک  نظام زیادہ  فائدہ  مند ہوگا،سی پیک کیلئےچین بھی اسلامی بینکاری نظام کاخواہاں ہے۔

فیصلے میں کہا گیا کہ  خلاف شریعت قرار دئیے گئےتمام قوانین یکم جون 2022سےختم ہوجائیں گے، ویسٹ پاکستان منی لانڈرایکٹ بھی خلاف شریعت قرار دیا گیا ۔  وفاقی شرعی عدالت نے حکومت کوفیصلےپرعملدرآمدکیلئے 5 سال کاوقت دیا۔ وفاقی شرعی عدالت نےسودکیخلاف درخواستوں پر 19 سال بعدفیصلہ سنایا۔

 سپریم کورٹ نے 2002 میں مقدمہ شریعت کورٹ کودوبارہ فیصلےکیلئےبھجوایاتھا۔

مزید :

اہم خبریںبزنس





Source link

More articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Latest article