اگر روس نے یوکرین پر کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال کیا تو امریکہ جواب دے گا۔

Must read

امریکی صدر جو بائیڈن نے کہا ہے کہ اگر روس نے یوکرین پر کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال کیا تو امریکہ جواب دے گا۔

اگر روس نے یوکرین پر کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال کیا تو امریکہ جواب دے گا۔
اگر روس نے یوکرین پر کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال کیا تو امریکہ جواب دے گا۔

خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق یوکرین پر روسی حملے کا ایک ماہ مکمل ہونے پر امریکی صدر یورپ کے اہم دورے پر ہیں جہاں وہ مغربی رہنماؤں سے مل رہے ہیں۔

صدر بائیڈن نے جمعرات کو بیلجیئم کے شہر برسلز میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے روس کو کیمیائی ہتھیار استعمال کرنے سے خبردار کیا۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا: ’اگر پوتن نے کیمیائی ہتھیار استعمال کیے تو ہم جواب دیں گے۔ جواب کا انحصار کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال پر ہو گا۔‘

یوکرین پر روسی حملے پر چین کے کردار پر بات کرتے ہوئے امریکی صدر جو بائیڈن نے کہا کہ انہوں نے چینی صدر شی جن پنگ پر روس کی معاونت کرنے کے نتائج ’واضح‘ کر دیے ہیں۔

صدر بائیڈن نے کہا: ’میری چین کے صدر شی سے چھ روز قبل بہت واضح گفتگو ہوئی ہے۔ میں نے کوئی دھمکی نہیں دی لیکن میں نے ان پر یہ واضح کر دیا تھا کہ ان کے روس کی معاونت کرنے کے نتائج کیا ہوں گے۔‘

امریکی صدر نے مزید وضاحت کرتے ہوئے کہا: ’چین سمجھتا ہے کہ اس کا معاشی مستقبل مغرب کے ساتھ جڑا ہے بجائے روس کے۔ اس لیے مجھے امید ہے کہ صدر شی اس معاملے میں نہیں پڑیں گے۔‘

امریکی صدر جو بائیڈن اور مغربی اتحادیوں نے یوکرین پرحملے کے جواب میں روس پر نئی پابندیوں اور یوکرین کے لیے انسانی امداد کا بھی اعلان کیا۔

اے ایف پی کے مطابق یورپ کے دورے کے دوران صدر بائیڈن نے یہ بھی اعلان کیا کہ امریکہ ایک لاکھ یوکرینی شہریوں کو پناہ دے گا اور خوراک، ادویات، پانی اور دیگر انسانی ضروریات کے لیے ایک ارب ڈالر کی اضافی امداد فراہم کرے گا۔

امریکہ، نیٹو، گروپ سیون اور 27 رکنی یورپی کونسل کے رہنماؤں نے جمعرات کو برسلز میں روسی حملے کا مقابلہ کرنے کے لیے اگلے اقدامات کے بارے میں تبادلہ خیال کیا تاہم وہ پوتن کی جانب سے کیمیائی، حیاتیاتی یا حتیٰ کہ جوہری ہتھیاروں کی تعیناتی پر ردعمل کے بارے میں ہچکچاہت کا شکار نظر آئے۔

بائیڈن نے کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کی صورت میں جوابی کارروائی کا تو کہا لیکن ساتھ ہی انہوں نے نیٹو اتحادیوں سمیت اس بات پر زور دیا ہے کہ امریکہ اور نیٹو یوکرین میں اپنی فوجیں نہیں بھیجیں گے۔

صدر بائیڈن نے کہا کہ مزید امداد جاری ہے لیکن مغربی رہنما احتیاط سے چل رہے ہیں تاکہ تنازع کو یوکرین کی سرحدوں سے آگے نہ بڑھایا جا سکے۔

صدر بائیڈن جمعے کو یوکرائن کی سرحد کے قریب پولش قصبے کا دورہ کریں گے تاکہ روسی حملے کے خلاف مغرب کے عزم کا اظہار کیا جا سکے۔

More articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Latest article