جونی ڈیپ اپنی سابق اہلیہ کے خلاف کیس جیت گئے جیوری نے فیصلہ سنادیا

Must read



جونی ڈیپ اپنی سابق اہلیہ کے خلاف کیس جیت گئے، جیوری نے فیصلہ سنادیا

واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن) ہالی ووڈ اداکار جونی ڈیپ نے اپنی سابق اہلیہ اداکارہ امبر ہرڈ کے خلاف ملٹی ملین ڈالر کا ہرجانے کا کیس جیت لیا، یہ کیس امبر ہرڈ کی جانب سے واشنگٹن پوسٹ کیلئے 2018 میں لکھے گئے آرٹیکل پر دائر کیا گیا تھا۔ عدالت نے جونی ڈیپ کو 15 ملین ڈالر دیے ہیں جب کہ ان کے خلاف امبر ہرڈ کی جانب سے دائر کیے گئے کیس میں اداکارہ کو دو ملین ڈالر ملے ہیں۔ جونی ڈیپ کی جانب سے امبر ہرڈ کے آرٹیکل کے خلاف 50 ملین ڈالر کے ہرجانے کا دعویٰ دائر کیا گیا تھا ، اس آرٹیکل میں اداکارہ نے لکھا تھا کہ وہ شادی کے دوران گھریلو تشدد کا شکار ہوئیں۔ امبر ہرڈ نے اس کیس کے خلاف 100 ملین ڈالر کا جوابی دعویٰ دائر کیا تھا۔ بی بی سی کاکہنا ہے کہ اس کیس میں دونوں اداکار ہی جیتے ہیں لیکن جونی ڈیپ کی جیت اس لیے زیادہ ہے کہ انہیں 15 ملین ڈالر ملے ہیں جب کہ امبر ہرڈ کو صرف دو ملین ڈالر دیے گئے ہیں، اس کا مطلب ہے کہ اداکارہ کو اپنے سابق شوہر کو 13 ملین ڈالر ادا کرنا ہوں گے۔

سکائی نیوز کے مطابق  جونی ڈیپ اور امبر ہرڈ کے  مقدمہ  کا ٹرائل امریکی ریاست ورجینیا کے شہر فیئر  فیکس کاؤنٹی میں چھ ہفتے تک جاری رہا، اس دوران مقدمے کی کارروائی براہ راست نشر کی جاتی رہی جو عالمی سطح پر خوب وائرل ہوئی اور پوری دنیا کی نظریں اس مقدمے پر ٹکی رہیں۔ جیوری کی جانب سے جیسے ہی کیس کا فیصلہ سنایا گیا عدالت کے باہر موجود مداحوں نے  “جونی ، جونی” کے نعرے لگائے۔

بی بی سی کے مطابق جیوری نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ امبر ہرڈ کی جانب سے جونی ڈیپ پر عائد کیے گئے الزامات جھوٹے اور اداکار کی ساکھ کو نقصان پہنچانے والے تھے۔ جیوری نے جونی ڈیپ کا دعویٰ قبول کرتے ہوئے انہیں 10 ملین ڈالر ہرجانے کے طور پر اور پانچ ملین ڈالر امبر ہرڈ کو سزا کے طور پر دینے کا فیصلہ سنایا ہے۔

جیوری نے یہ بھی قرار دیا کہ امبر ہرڈ کی جانب سے جونی ڈیپ پر جو الزامات عائد کیے گئے تھے وہ مکمل طور پر ثابت نہیں ہوسکے ۔ جیوری کے مطابق جونی ڈیپ نے اپنے وکیل کے ذریعے امبر ہرڈ کی ہتکِ عزت کی ہے اس لیے اداکارہ کو دو ملین ڈالر ہرجانے کے طور پر ادا کیے جائیں گے۔ جیوری نے سزا کے طور پر کوئی بھی جرمانہ عائد نہیں کیا گیا ۔ 

مزید :

اہم خبریںتفریح





Source link

More articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Latest article