روس نے یکرین کیخلاف جنگ مین ہلاک ہونیوالے اپنے فوجیو کی اصل تعداد بتادی

Must read

روس نے یوکرین کیخلاف جنگ میں ہلاک ہونیوالے اپنے فوجیوں کی اصل تعداد بتادی۔ حکام کا کہنا ہے کہ یوکرین ک جنگ میں روس کے 1300 سے زائد فوجی ہلاک ہوچکے ہیں جبکہ نیٹو نے گزشتہ روز دعویٰ کیا تھا کہ روس کے 15 ہزار سے زائد فوجی مارے جاچکے ہیں۔

روس نے یکرین کیخلاف جنگ مین ہلاک ہونیوالے اپنے فوجیو کی اصل تعداد بتادی

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق روسی اعلیٰ عسکری حکام نے میڈیا کو بریفنگ میں پہلی مرتبہ جنگ کے دوران ہونیوالی ہلاکتوں سے متعلق معلومات دی ہیں۔ حکام نے بتایا کہ یوکرین میں ایک ہزار 351 روسی فوجی ہلاک اور 3 ہزار 825 زخمی ہوچکے ہیں۔

روسی وزارت دفاع کے اعلیٰ عہدیدار میخائل میزنٹسیو نے کہا کہ 4 لاکھ 19 ہزار 736 شہریوں کو مشرقی یوکرین کے شہروں ڈونیٹسک اور لوگانسک سمیت دیگر علاقوں سے نکالا گیا ہے، یوکرین سے انخلاء کرنیوالوں میں 88 ہزار سے زائد بچے جبکہ 9 ہزار غیر ملکی بھی شامل ہیں، انسانی ہمدردی کی بنیاد پر ہمیشہ راستے فراہم کرتے رہیں گے۔

روسی جنرل اسٹاف کے ایک اور اعلیٰ نمائندے سرگئی روڈسکو نے کہا کہ مغربی ممالک کی جانب سے یوکرین کے دارالحکومت کیف کو ہتھیاروں کی فراہمی ایک بڑی غلطی تھی، اس سے آپریشن کو طول ملا ہے، متاثرین کی تعداد میں اضافہ ہوا، تاہم یہ آپریشن کے نتائج پر اثر انداز نہیں ہوسکے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ ہتھیاروں کی سپلائی کا اصل مقصد یوکرین کو مدد فراہم کرنا نہیں ہے بلکہ اسے طویل جنگی تنازع کی جانب دھکیلنا ہے، نیٹو تنظیم کے چند رکن ممالک فضائی حدود بند کرنے کا کہہ رہے ہیں، روس کی فوج اس کی مناسبت سے اپنا ردعمل دے گی۔

سرکئی روڈسکو نے یوکرین میں جاری جنگ کے حوالے سے کہا کہ پورے ملک پر روس کا آپریشن جاری ہے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ اس جنگ کے دوران یوکرین کے 14 ہزار فوجی ہلاک جبکہ 16 ہزاز زخمی ہوچکے ہیں۔

دوسری جانب نیٹو نے گزشتہ روز اپنے ایک بیان میں یہ کہا تھا کہ یوکرین کیخلاف جنگ میں روس کے 15 ہزار سے زائد فوجی مارے ماچکے ہیں جبکہ یوکرین بھی دعویٰ کرتا ہے کہ اس نے روس کے 10 ہزار سے زائد فوجی ہلاک کردیئے ہیں

More articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Latest article