زندگی کے 22سال ورلڈکپ اب یہ 22سال خط لے کر  پھرتا رہے گا مریم نواز کا ورکرز کنونشن سے خطاب

Must read


” زندگی کے 22سال ورلڈکپ ، اب یہ 22سال خط لے کر  پھرتا رہے گا” مریم نواز کا ورکرز …

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان مسلم لیگ(ن) کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا ہے کہ  انتخابات سے مسلم لیگ (ن) نہیں ڈرتی، انتخابات سے وہ ڈرتے ہیں جو 16  میں سے 15  ضمنی الیکشن اپنی حکومت  ہونے کے باوجود ہار جاتا ہے۔ عمران خان پہلے 22 سال تک ورلڈ کپ اٹھا کر پھرتا رہا اور اب اگلے 22 سال یہ خط اٹھا کر پھرتا رہے گا۔

لاہور کے حلقہ این اے 128 میں  ورکرز کنونشن سےخطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مبارک ہو عمران نیازی سے آپ کی جان چھوٹ گئی ہے،یہ عمران خان نہیں توشہ خان ہے۔ کل تک یہ نو سرباز کہتا تھا کہ نواز شریف کی سیاست ختم ہو گئی اور اب یہ رو رہا ہے کہ نواز شریف نے لندن میں بیٹھ کر میری حکومت ختم کر دی۔ میں نے کہا تھا کہ تم نے جتنا اچھلنا ہے اچھل لو نواز شریف لمبی ریس کا گھوڑا ہے تمہیں ایسی جگہ مارے گا کہ  تمہیں لگ پتہ جائے گا۔

پاکستان مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر نے کہا کہ یاد ہے این اے 128جب نواز شریف حکومت میں تھے اور عمران خان ان کے خلاف سازش کرتے تھے اور نواز شریف نے کہا کہ جاو بیٹا سیاست تمہارے بس کی بات نہیں ہے تم بس کرکٹ ہی کھیلو،میں آج بھی کہتی ہوں سیاست اور ان شیروں کا مقابلہ کرناتمہارے بس کی بات نہیں ہے۔میاں صاحب جب آئیں گے تو لگ پتہ جائے گا۔

مریم نواز نے کہا کہ تم جس کنٹینر سے اترے تھے نواز شریف نے لندن سے ہی تمہیں ساڑھے تین سال بعد اسی کنٹینر پر واپس پہنچایادیا ہے۔آج نواز شریف کا شہباز شریف وزیراعظم ہے اور حمزہ شہباز پنجاب کا وزیراعلی ہے۔شہباز شریف سے تمہاری کانپیں ٹانگ رہی ہیں۔شہباز شریف نے شیروانی پہن لی ہے تم  اب اپنے زخم چاٹتے رہو۔عمران خان اپنی ناپاک زبان سے نواز شریف اور شہباز کا نام کیسے لیتے ہو؟تمہارا اور شہباز شریف کا بھلاکیا مقابلہ؟ کہا ں وہ  12 بجے اٹھنے والا عمران خان اور کہاں صبح کی نماز  کے ٹائم اٹھنے اور کام پر جانے والا شہباز شریف،کہاں  دن رات ایک کر کے عوام کی خدمت کرنے والا شہباز شریف اور کہاں تم؟کہاں تاریخی نااہلی  کرنے والا عمران خان اور کہاں چند دن میں گورننس کا ٹریک سیدھا کرنے والا شہباز شریف؟کہاں مافیاز کو نوازنے والااور 120روپے فی کلو  میں چینی  فروخت کرنے والا عمران خان اور کہا ں 70روپے میں چینی فروخت کرنے والا شہباز شریف؟ کہاں آٹے کا تھیلا 550 روپے کردینا والا عمران خان اور کہاں آٹے کے تھیلے کو 440روپےمیں کرنے والا شہباز شریف؟

انہوں نے کہا کہ جب ہزارہ کمیونٹی لاشیں رکھ کر اس کا انتظار کر رہی تھی تو  یہ کہتا تھا کہ مجھے پنکی پیرنی نے منع  کیا ہوا ہے کہ لاشوں کے سامنے نہیں جانااور کہاں شہباز شریف جس کو آئے ہوئے ابھی چند ہفتے  ہی ہوئے ہیں وہ کبھی بلوچستان پہنچا ہوتا ہےاور کبھی سندھ میں۔مریم نواز کا کہنا تھا کہ عمران خان کے پاس عوام کو دکھانے کے لیے ایک منصوبہ بھی نہیں ہے،عمران خان کے پلے کچھ بھی نہیں ہے۔ کیا تم جانتے ہو کہ یہ  انتخابات ،انتخابات کا راگ کیوں الاپ رہا ہے،یہ ڈرامہ مریم نواز اور پورا پاکستان جانتا ہے۔انتخابات سے مسلم لیگ (ن) نہیں ڈرتی،انتخابات سے وہ ڈرتے ہیں جو 16  میں سے 15  ضمنی الیکشن اپنی حکومت ہونے کےباوجود ہار جاتا ہے۔مسلم لیگ ن جانتی ہے کہ عوام کی طاقت آج بھی ان کے ساتھ کھڑی ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ نہیں چاہتا تھا کہ مسلم لیگ (ن)حکومت میں آئے کیونکہ اس کو پتا تھا کہ اگر مسلم لیگ ن میرے بعد اقتدار میں آ گئی تو میری کرپشن کے کچے چھٹے عوام کے سامنے آ جائیں گے۔یہ آخری منٹ تک منتیں کرتا رہا،کبھی اسٹیبلشمنٹ کے پاوں پڑتا تو کبھی آصف علی زرداری سے ساتھ دینے کا کہتا ، پھر بھی جب بات نہ بنی تو جھوٹا خط لے کر آ گیا۔اس خط پر جو کچھ لکھا ہوا ہے وہ بچہ بچہ جانتا ہے کہ جب نمبرز پورے نہ ہوں تو سازش ہوتی ہے،جب  کارکردگی کا خانہ خالی ہو تو سازشی خط جیسا ڈرامہ رچانا پڑتا ہے۔ زندگی کے 22سال یہ ورلڈکپ اٹھا کر پھرتا رہا اور اب یہ 22سال اس خط کو لے کر  پھرتا رہے گا۔

مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر کا کہنا تھا کہ ایک ہوتا ہے کورونا وائرس اور ایک ہوتا ہے رونا وائرس  ،عمران نیازی روتے کیا ہو مردوں کی طرح مقابلہ کرو میدان میں آؤ۔ اپنے دور حکومت میں چیف الیکشن کمشنر کی تعریفیں کرتا رہا اب  کہتا ہے کہ استعفیٰ دو اور گھر جاو۔عمران خان توشہ خانہ کے ذریعے پاکستان بیت المال کو لوٹ کر کھا گیا،اس نے بیت المال کو کاروبار کا ذریعہ بنا دیا۔ پاکستان کو ملنے والے تحفے کروڑوں روپے میں جا کر بازار میں بیچے ،تم نے صرف تحفے نہیں بیچے بلکہ پاکستان کے دوسرے ممالک کے ساتھ تعلقات کو  18  کروڑ میں بیچا ہے۔پھر کہتے ہو میرے تحفے میری مرضی تو سن لو نہ یہ تمہارے تحفے ہیں اور نہ ہی تمہاری مرضی ہے ،تحفے بھی ریاست کے ہیں اور مرضی بھی ریاست کی ہو گی۔

مریم نواز کا کہنا تھا کہ عمران خان  کو جواب دینا پڑے گا کہ  فرح گوگی کون تھی؟آپ کی اہلیہ کا اس سے کیا رشتہ تھا؟کیا آپ کی حکومت سے پہلے اس کے پاس اتنی جائیداد تھی؟لاہور اور پنجاب کی ترقی فرح خان اور بزدار کے ساتھ مل کر کھا لی گئی۔دو دو کروڑ میں تقریریاں ہوا کرتی تھیں۔عمران نیازی مجھے یہ بتاؤ پولیس کے گھیرے میں راتوں رات فرار کیوں کروایا فرح کو؟تم کہتے ہو کہ رات کو 12  بجے  عدالتیں کیوں کھولی گئیں تو میں بتاتی ہوں رات کو  12 بجے عدالتیں  اس لیے کھولی گئی تھیں کہ تم نے آئین توڑا تھا ،قومی اسمبلی کو بنی گالہ سمجھ رکھا تھا۔

لیگی نائب صدر نے کہا کہ   صدر عارف علوی  نے   پاکستان کی  22کروڑ کی عوام کواپناذاتی کلینک سمجھا رکھا ہے،  اگر عمران خان کا ساتھ دینے کا اتنا ہی شوق ہے تو استعفیٰ دو اور گھر چلے جاو۔

مزید :

قومیاہم خبریں





Source link

More articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Latest article