سابق وفاقی وزیر فواد چوہدری کوجسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا گیا 

Must read



سابق وفاقی وزیر فواد چوہدری کوجسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا گیا 

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آباد کی عدالت نے الیکشن کمیشن حکام کو دھمکیاں دینے کے کیس میں تحریک انصاف کے سینئر نائب صدر فواد چوہدری کا 2روزہ جسمانی ریمانڈ دے دیا  ۔ڈیوٹی مجسٹریٹ نوید خان نے فواد چوہدری کو 27جنوری کو دوبارہ عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔

بدھ کی صبح اسلام آباد پولیس کی جانب سے فوادچوہدری کو الیکشن کمیشن کے ارکان کودھمکیاں دینے کے الزام میں لاہور سے گرفتار کیا گیاجس کے بعد سابق وفاقی وزیر کو ایف ایٹ کی عدالت میں پیش کیا گیا۔اس موقع پر الیکشن کمیشن کے وکیل نے ایف آئی ار کا متن پڑھ کر سنایا جس کے مطابق ملزم کی جانب سے الیکشن کمیشن کو متنازع بنانے کی کوشش کی گئی، فواد چوہدری نے شہریوں کو اشتعال دلایا، پی ٹی آئی رہنما نے کہا کہ الیکشن کمیشن کے ملازمین کے گھروں تک پہنچیں گے، ان کا مقصد آئینی ادارے کے خلاف نفرت کو فروغ دینا تھا۔ الیکشن کمیشن کے وکیل نے مزید کہا کہ ایف آئی ار میں بغاوت کی دفعات بھی شامل ہیں، الیکشن کمیشن کے ارکان کو دھمکیاں دی جا رہی ہیں، الیکشن کمیشن کو دھمکی آمیز خط لکھے جا رہے ہیں، دھمکیوں والا مواد چیمبر میں دکھا سکتا ہوں۔

 فواد چوہدری نے کہا اس میں کوئی شک نہیں کہ الیکشن کمیشن کی حالت واقعی منشی جیسی ہے، تحریک انصاف کا ترجمان ہوں،جو بات کرتا ہوں وہ میری پارٹی پالیسی ہوتی ہے۔ ضروری نہیں جو بات کروں وہ میرا ذاتی خیال ہو، میری باتوں کا غلط مطلب لیا گیا، ایف آئی آر کو قانونی مان لیا تو عوام کے بنیادی حقوق متاثر ہوں گے لہٰذا کیس کو خارج کیا جائے۔

اس موقع پر اسلام آباد پولیس کی جانب سے فواد چوہدری کے 8روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی گئی ۔ ڈیوٹی مجسٹریٹ نوید خان نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا تھا ۔ بعد ازاں عدالت نے دو صفحات پر مشتمل فیصلہ سناتے ہوئے فواد چوہدری کو 2روزہ ریمانڈ پرپولیس کے حوالے کردیا ،عدالت کی جانب سے حکم دیا گیا ہے کہ فواد چوہدری کو جمعہ کے روز دوبارہ عدالت میں پیش کیا جائے ۔

مزید :

Breaking Newsاہم خبریںقومی





Source link

More articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Latest article