شہباز تتلہ قتل کیس مرکزی ملزم ایس ایس پی مفخر عدیل کو عمر قید کی سزا سنا دی گئی 

Must read



شہباز تتلہ قتل کیس ، مرکزی ملزم ایس ایس پی مفخر عدیل کو عمر قید کی سزا سنا دی …

لاہور ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) شہباز تتلہ قتل کیس کے مرکزی ملزم ایس ایس پی مفخر عدیل کو عمر قید کی سزا سنا دی گئی ۔

نجی ٹی وی دنیانیوز کے مطابق مقامی عدالت نے  سابق  اسسٹنٹ ایڈووکیٹ جنرل  شہباز تتلہ قتل کیس کا فیصلہ سنا دیا ، عدالت نے مرکزی ملزم ایس ایس پی مفخر عدیل کو عمر قید کی سزا سنائی جبکہ ملزمان اسد سرور بھٹی اور کانسٹیبل عرفان کو بری کر دیا۔

خیال رہے کہ  پولیس کی جانب سے کیس کے عبوری چالان میں  بتایا گیا کہ  مفخر عدیل اور اسد بھٹی نے شہباز تتلہ کوکلمہ چوک سے اغواکیا،ملزمان نے مشروب میں نشہ آور چیز پلائی جس سے کچھ دیر بعد شہباز تتلہ بے ہوش ہو گئے ، مفخر عدیل شہباز تتلہ کے منہ پر تکیہ رکھ کر بیٹھ گئے جس سے ان کی موت ہو گئی ۔

چالان میں کہا گیا ہے کہ ملزموں نے شہباز تتلہ کو ڈرم میں ڈالنے کے بعد تیزاب ڈال دیا تھااورمحلول کو گٹر میں بہایاگیا،پولیس نے مفخر عدیل سمیت دیگر کیخلاف عبوری چالان عدالت میں جمع کرا دیا۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق  ملزم نے پولیس کو ابتدائی بیان میں کہا تھا کہ   اسی نے شہباز تتلہ کو قتل کیا اور لاہور سے فرار ہوگیا، مفخر عدیل نے ابتدائی بیان میں پولیس کو بتایا ہے کہ 2012ء میں میری سابقہ بیوی اسما ناراض ہو کر شہباز تتلہ کے گھر گئی، شہباز تتلہ کے گھر میں اس وقت کوئی موجود نہ تھا جس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے اس نے اسما کے ساتھ مبینہ طور پر زیادتی کی اور اسی بات کو لے کر میری اپنی بیوی سے علیحدگی ہوگئی۔

مفخرعدیل نے بتایا کہ شہباز تتلہ نے میری موجودہ بیوی علیزہ کے ساتھ بھی زیادتی کی کوشش کی اور اس کو میری سابقہ بیوی کے ساتھ کی گئی حرکت کے بارے میں بھی بتایا، یہ تمام بات میری موجودہ بیوی نے مجھے بتائی جس پر میں انتقام کی آگ میں جلنے لگا اور میں نے شہباز تتلہ کے قتل کی منصوبہ بندی کی۔

مزید :

اہم خبریںقومیجرم و انصافعلاقائیپنجاب





Source link

More articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Latest article