مسجدِ نبوی   ﷺ میں ہونے والی نعرے بازی پر عمران خان کے خلاف تنقید تحریک انصاف کے حامیوں کا  خطیب کا گھیرائو مسجد سے نکال دیا

Must read


مسجدِ نبوی   ﷺ میں ہونے والی نعرے بازی پر عمران خان کے خلاف تنقید ، تحریک …

پشاور (ویب ڈیسک) صوبائی دارلحکومت  کی ایک مسجد میں خطیب کی جانب سے مسجدِ نبوی   ﷺ میں ہونے والی نعرے بازی پر عمران خان کے خلاف تنقید پر تحریکِ انصاف کے حامی نمازیوں نے احتجاج کیا اور مبینہ طور پر خطیب کو مسجد سے نکال دیا گیا۔

وائس آف امریکہ کے مطابق حیات آباد میں نمازِ جمعہ سے قبل خطیب نے مسجدِ نبوی میں وزیرِ اعظم شہباز شریف اور وفاقی وزرا کے خلاف نعرے بازی پر تنقید کرتے ہوئے سابق وزیرِ اعظم عمران خان کو موردِ الزام ٹھہرایا تو اس موقع پر تحریکِ انصاف کے حامی نمازیوں نے خطیب کا گھیراؤ کر لیا۔پشاور کے سٹی میئر زبیر علی نے   بتایا کہ مسجد کے خطیب مولوی نذیر اور حیات آباد کی بنگش مارکیٹ سے تعلق رکھنے والے تحریکِ انصاف کے کارکنوں کے درمیان نمازِ جمعہ سے قبل مدینہ واقعے پر تلخی ہوئی، علاقہ معززین کی مداخلت اور حکام کی کوششوں سے فریقین کے درمیان تصفیہ کرا دیا گیا ہے اور اب صورتِ حال معمول پر ہے۔سٹی میئر پشاور زبیر علی کے مطابق فریقین کے درمیان تصفیے کے بعد خطیب سے کہا گیا ہے کہ وہ سیاسی معاملات پر تبصرہ یا رائے دینے سے گریز کریں جب کہ نمازیوں کو بھی مسجد میں سیاست نہ کرنے کی ہدایت کی گئی ۔زبیر علی کا کہنا تھا کہ معاملہ خوش اسلوبی سے حل ہونے پر ہفتے کو نمازِ ظہر کے موقع پر اُنہوں نے فریقین کا شکریہ ادا کیا۔

رپورٹ کے مطابق حیات آباد فیز سکس کی جاخع مسجد بنگش مارکیٹ کے خطیب نے  ردِعمل دیتے ہوئے عمران خان کے خلاف سخت الفاظ استعمال کیے جس پر لوگ خاموش رہے  تاہم خطیب کی جانب سے دوبارہ عمران خان کے خلاف بات کرنے پر لوگ اُٹھ کھڑے ہوئے اور بحث و تکرار شروع ہو گئی۔اس دوران مسجد میں کافی دیر تک ہنگامہ آرائی رہی اور بعد میں پولیس اہل کاروں نے پہنچ کر نائب خطیب کے ذریعے نمازِ جمعہ کی ادائیگی کرائی۔ بعض اطلاعات کے مطابق تحریکِ انصاف کے حامی نمازیوں نے اس دوران مسجد کے خطیب کو زبردستی مسجد سے باہر نکال دیا۔

حکام کا کہنا ہے کہ پشاور کی مسجد میں پیش آنے والا واقعے میں تصفیے کے بعد کسی کے خلاف کوئی قانون کارروائی نہیں کی گئی۔

خیال رہے کہ جمعرات کو وزیرِ اعظم شہباز شریف اور وفاقی وزرا مسجد نبوی آئے تھے، اس دوران سوشل میڈیا پر کئی ویڈیوز وائرل ہوئی تھیں جن میں وزیر، اعظم شہباز شریف، مریم اورنگزیب اور وفاقی وزیر شاہ زین بگٹی کو دیکھ کر لوگوں نے چور، چور کے نعرے لگائے تھے۔

مزید :

قومیاہم خبریں





Source link

More articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Latest article